Master اور PhD اسکالرشپ حاصل کرنے کا سفر – ًمناحل نوشین کی زبانی- پہلا قسط

سب سے پہلے آپ اپنے فیلڈ کے مطابق لوگ ڈھونڈویں جن سے آپ اپنے فیلڈ کے بارے مشورہ کریں. فیلڈ کے لوگ ڈھونڈنے کے لئے آپ فیس بک پر یا اسکالرشپ گروپ میں اپنی فیلڈ کے بارے پوسٹ کریں اور التجا کریں کہ آپ کا فیلڈ کا بندہ آپ سے بات کرے۔۔۔۔۔۔

دنیا کے ممالک انٹرنیشنل اسکالرشپس فری میں کس قسم کی سٹوڈنٹس کو دیتے ہے-

یہ ممالک بھترین اور ٹیلنٹڈ سٹوڈنٹس کو اپنے ممالک میں بسانا چاہتے ہے ۔اپ سے سٹوڈنٹس کی ایک بڑی تعداد انھی ممالک میں رہائش پزیر ہوجاتی ہے۔ جو انکو انے والے وقت میں جابز کیلئے قابل لوگوں کو دنیا بھر سے ہائیر کرتے ہے۔

یہ 6 غلطیاں نہ کریں ورنہ اسکالرشپ کھبی نہیں ملے گا

یورپ اور شمالی امریکہ کی زیادہ تر اعلیٰ یونیورسٹیاں اور تحقیقی ادارے انڈر گریجویٹ اور ماسٹرز طلباء کو سمر انٹرنشپ انٹرنیشنل سٹوڈنٹس کو دیتے ہیں۔ زیادہ تر یہ انٹرنشپ آپ کے تمام اخراجات کو مکمل طور پر پورا کرتی ہیں۔ اس انٹرنشپ کے دوران، آپ کو ایک پروفیسر کی نگرانی میں ایک تحقیقی پروجیکٹ مکمل کرنا ہوتا ہے۔ یہ اپنی قابلیت کو ثابت کرنے، اپنے کو بڑھانے، ایکا معروف انسٹی ٹیوٹ میں تحقیق کرنے اور بین الاقوامی نمائش حاصل کرنے کا ایک بہترین موقع ہے

انٹرنیشنل اسکالرشپس کیلئے CV بنانے کا اسان طریقہ

غیر ضروری معلومات جیسے جنس وغیرہ نہ دیں جب تک اسکالرشپس کمیٹی یا پروفیسر اپسے نہ کہیں۔ اگر آپ انٹرنیشنل ملک درخواست دے رہے ہیں جو نام کے ذریعے آپ کی جنس وغیرہ کا فیصلہ نہیں کر سکتے۔ تب اگر آپ کو لگتا ہے کہ اس کی ضرورت ہے تو پھر سب دے سکتے ہے

انٹرنیشنل اسکالرشپ حاصل کرنے کا مکمل طریقہ کار-

دنیا کی تقریباً ہر ملک انٹرنیشنل سٹوڈنٹس کیلئے اسکالرشپ دیتے ہے کہ باہر ملک سٹوڈنٹس آئیے اور وہ حکومت کے خرچے ہر اپنی بیچلر، ماسٹر اور پی ایچ ڈی مکمل کریں۔ اسکالرشپ دینے کی مختلف وجوہات ہوتی ہے جس میں خارجہ پالیسی کو تقویت اور ریسرچرز کو باہر دنیا سے مدوع کرکے مسائل کے حل سائنسی طریقے سے نکالنا سر فہرست ہوتا

کسی بھی انٹرنیشنل اسکالرشپ حاصل کرنے کیلئے یہ عادتیں اپنائیں

معاشرے میں کامیاب ہونے والوں میں ایک چیز مشترک ہے وہ ہے خود اعتمادی۔ اردگرد لوگ، دوست اور بہت سارے لوگ آپسے کہینگے کہ یہ نہیں ہوگا! اپنا ٹائم ضائع نہ کریں وغیرہ وغیرہ مگر آپ کو یہ ذہنیت تیار کرنے کی ضرورت ہے کہ آپ جس چیز کے لیے نکلے ہیں اسے حاصل کرنے کے لیے آپ کافی اچھے ہیں، اور اپ اس کو کرسکتے ہے۔.

کیا کنسلٹنٹ کے زریعے اسکالرشپ پر اپلائی کرنا چاھئے۔

دنیا بھر میں ہر جگہ اپکو کنسلٹنٹ ملینگے جو اپکو اسکالرشپ دینے کا وعدہ کرکے آپسے پیسے بٹورتے ہے۔ کنسلٹنٹ نے ہمارے نوجوانوں کی صلاحیتوں کو مفلوج کرکے دیا ہے۔ اگر آپ انٹرنیشنل یونیورسٹی میں داخلے یا اسکالرشپ کے لیے درخواست دے رہے ہیں، تو آپ کو خود ہی اتنا قابل بننا پڑھئیگا۔ کہ اپ درخواست دینے کے قابل خود ہو۔ کیونکہ درخواست دینے کا طریقہ کار سیدھا سادہ ہے، اور آپ اپنی ڈاکومنٹس کو جتنی درست طریقے سے تیار کر سکتے ہیں، کوئی کنسلٹنٹ بھی آپ کے لیے ایسا نہیں کر سکتا۔ اور سب سے بڑی بات یہ ہے کہ یہ عمل آپ کو ایک بہت بڑا تجربہ فراہم کرتا ہے اور یقیناً خود کار اپلائی کا طریقہ اپکو کنسلٹنٹ پر پیسہ ضائع کرنے سے بچاتا ہے۔

کم مارکس یا CGPA والوں کیلئے کونسے اسکالرشپ پر اپلائی کرنا چاھیے،

کے عمل میں وقت لگتا ہے۔ یہ ایک لانگ ٹرم پراسیس ہوتا ہے۔ یہ کچھ دنوں کا نہیں بلکہ مہینوں کا پراسیس ہوتا ہے۔ اور اس میں صبر کی ضرورت ہوتی ہے اس لیے اسکالرشپ کے لیے اپلائی کرتے وقت مسلسل ثابت قدم رہیں اور ہر اسکالرشپ کے لیے اپلائی کریں، ساتھ ہی ساتھ آپ کو بڑے دل کے ساتھ ریجیکشن ہونے کا حوصلہ اور بار بار اپلائی کرنے کا حوصلہ ہونا چاہیے۔ آپ کو مسترد ہونے کا سامنا کرنا پڑے گا لہذا اپنی درخواستوں کو مستقل طور پر بہتر بناتے رہیں اور اپنی پوری کوشش کریں